پٹنہ

ہائی کورٹ کے وکیل کا دن دہاڑے گولی مار کر قتل، مخالفت میں وکلاء کا ہنگامہ

پٹنہ: ہائی کورٹ کے وکیل جتندر کمار کے قتل سے ناراض پٹنہ ہائی کورٹ کے وکیل نے کام کاج کو ٹھپ کر دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ایڈووکیٹ سڑک پر اتر کر احتجاج کر رہے ہیں۔بیلی روڈ پر واقع ہائی کورٹ کے پاس وکلا نے سڑک کو جام کر دیا اور مجرموں کی گرفتاری کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ جیسے واقعہ کی اطلاع ہائی کورٹ کے وکلاء کو ملی تو وہ مشتعل ہو گئے۔ قتل کی مخالفت میں لنچ کے بعد وکلانے عدالتی کام کاج ٹھپ کر دیا۔ وکلا کی مخالفت کے آگے پولیس کی بھی نہیں چلی۔ ہنگامہ کرتے ہوئے وکیلوں نے پولیس کو بھی نکال دیا۔
واضح ہو کہ اس سے پہلے بے خوف مجرموں نے ایک بار پھر پولیس کو کھلا چیلنج دیتے ہوئے دن کے اجالےمیں ایک شخص کو گولی مار کر قتل کر دیا۔ واقعہ بدھ کی صبح دارالحکومت پٹنہ کے راج ونشی نگر علاقے میں پیش آیا۔ جہاں مجرموں نے پٹنہ ہائی کورٹ کے وکیل جتندر کمار کا گولی مار کر قتل کر دیا۔ گولی لگنے سے وکیل کی موقع پر ہی موت ہو گئی۔ مجرموں نےاس واقعہ کو انجام اس وقت دیا جب جتیندر پریکٹس کے لئے ہائی کورٹ جا رہے تھے۔واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد موقع پر پہنچی پولیس نے تحقیقات شروع کر دی ہے۔ اس کے ساتھ ہی پولیس لاش کو اپنے قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیجنے کی تیاری میں لگی ہوئی تھی۔ بتایا جا رہا ہے کہ جتیندر کا قتل زمین تنازع سے منسلک ہے۔ تاہم اس کی سرکاری تصدیق نہیں کی گئی ہے۔ وہیں دارالحکومت پٹنہ کے پاش علاقے میں ہوئےاس واقعہ کے بعد لوگ گھبراہٹ میں ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close