اتر پردیش

ہاپوڑ: گئوکشی کے الزام میں ایک شخص کا پیٹ پیٹ کر قتل

ہاپوڑ کے پلکھوا میں کچھ لوگوں نے گئوکشی کا الزام لگاتے ہوئے قاسم نامی ایک شخص کو پیٹ پیٹ کر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا ہے۔ وہیں، دوسرا شخص سنگین طور پر زخمی ہے۔ اس معاملہ میں پولیس نے 25 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔ ڈی ایم کی ہدایت کے بعد گاؤں میں بھاری سیکورٹی فورسز کی تعیناتی کر دی گئی ہے۔

واقعہ پلکھوا کے بچھیڑا خورد گاوں کا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ ایک گائے اور اس کا بچھڑا قاسم کے کھیت میں گھس گیا تھا جسے قاسم بھگا رہا تھا۔ اسی دوران گاوں میں کچھ لوگوں نے گئوکشی کی افواہ پھیلا دی اور موقع پر پہنچے دبنگوں نے قاسم اور اس کے ساتھی کو پیٹ پیٹ کر بری طرح زخمی کر دیا۔ جس کے بعد علاج کے دوران قاسم کی موت ہو گئی۔

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس کے اعلیٰ افسران جائے حادثہ پر پہنچ گئے۔ پولیس نے مہلوک کے بھائی کی تحریر پر 25 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور معاملہ کی تحقیقات میں جٹ گئی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ پولیس نے ہی دونوں زخمیوں کو قریبی اسپتال میں بھرتی کرایا تھا لیکن قاسم نامی نوجوان کی علاج کے دوران ہی موت ہو گئی۔ وہیں، ایک دیگر نوجوان کا علاج جاری ہے۔

دیہاتیوں کا الزام ہے کہ قریب نصف درجن لوگ پڑوس کے گاؤں سے کھیتوں کے راستے 3 گائے لے کر كٹان کے لئے جا رہے تھے۔ جیسے ہی یہ معلومات دیہاتیوں کو لگی تو موقع پر دیہاتیوں کے پہنچنے کے بعد 4 لوگ بھاگ گئے جبکہ دو لوگ وہیں رہ گئے جن کے پاس سے 3 گائیں برآمد ہوئیں۔ دیہاتیوں نے دونوں کی جم کر پٹائی کر ڈالی۔ الزام ہے کہ اسی دوران پڑوسی گاؤں کی جانب سے دیہاتیوں پر فائرنگ بھی کی گئی۔ فی الحال گاؤں میں کشیدگی کو دیکھتے ہوئے بھاری پولیس فورس تعینات کر دی گئی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close