بین الاقوامی

ہمارا مقصد ایران میں حکومت کی تبدیلی نہیں: بولٹن

یوروشلم: امریکی صدر ٖونالڈ ٹرمپ کے دفاعی صلاح کار جان بولٹن نے کہا ہے کہ ایران پر لگائی گئی اقتصادی پابندیوں کا اس پر زبردست اثر ہوا ہے اور اس بات کو وہاں بھی محسوس کیا جا رہا ہے لیکن اس پابندی کا مقصد ایران میں حکومت کی تبدیلی نہیں ہے۔قابل ذکر ہے کہ جون 2015 میں ایران کے ساتھ بین الاقوامی جوہری سمجھوتے سے امریکہ پیچھے ہٹ گیا تھا اور ایرن پر اسی ماہ کئی قسم کی اقتصادی پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔اسرائیل کے دورے پر آئے بولٹن نے صحافیوں سے کہا کہ’’ مجھے یہ کہنے دیجئے کہ ایران پردوبارہ لگائی گئی پابندیوں کا اس پر کافی اثر پڑا ہے اور لوگوں میں اس بات کو لیکر کافی بحث بھی ہو رہی ہے ۔ہمارا مقصدوہاں حکومت کی تبدیلی نہیں ہے لیکن ہم چاہتے ہیں کہ ایران کے طرز عمل میں تھوڑی تبدیلی آئے‘‘۔ایران پر لگائی گئی اقتصادی پابندیوں کا وہاں کی معیشت پر بہت گہرا ثر پڑا ہے اور ایران حکومت نے ان کا مقابلہ کرنے کے لئے کچھ سخت اقتصادی قدم بھی اٹھائے ہیں۔کھانے۔پینے کی اشیاء کی قیمتوں میں ہورہے اضافہکے سلسلے میں ایران کے شہریوں نے خوب احتجاج کیا ہے۔بولٹن نے کہا کہ اقتصادی پابندیوں کا ایران پر یقینی طور سے کافی اثر پڑا ہے اور یہ ان کے تخمینے سے بھی کہیں زیادہ ہے۔اس کے علاوہ وہ ایران پر مزید دباؤ بنانے کے لئے اور بھی پہلؤوں پر غور کر رہے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close