کھیل

ہندوستان نے آسٹریلیا میں پہلی ٹسٹ سیریز جیتے کا موقع بنایا

سڈنی:ہندوستانی کرکٹ ٹیم کی زبردست بلے بازی کے بعد کلائی کے اسپنر کلدیپ یادو اور لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ کے جھٹکوں سے آسٹریلیا نے چوتھے ٹیسٹ کے تیسرے دن ہفتہ کو بارش کی وجہ سے دن کا کھیل جلد ختم ہونے تک 236 رن جوڑ کر اپنے چھ وکٹ گنوا دیئے۔
آسٹریلوی ٹیم اب بھی ہندستان کے اسکور سے 386 رنز پیچھے ہے اور اس کے صرف چار وکٹ باقی ہیں۔ چار میچوں کی سیریز میں 2-1 کی برتری حاصل کر چکی مہمان ٹیم نے کل اپنی پہلی اننگز سات وکٹ پر 622 رن بنا کر اعلان کر دی تھی اور فی الحال میچ مکمل طور پر اس کے کنٹرول میں بنا هوا ہے۔
ہندستانی گیند بازوں میں اسپنروں کا جلوہ رہا جنہوں نے آسٹریلیا کی رنز کی رفتار کو کنٹرول میں رکھا۔ چائنامین بولر کلدیپ نے میچ میں اپنی چھاپ چھوڑتے ہوئے 24 اوور کی بولنگ میں 71 رنز دے کر سب سے زیادہ تین وکٹ نکالے جبکہ لیفٹ آرم اسپنر جڈیجہ نے اپنی شاندار بلے بازی کے بعد بہترین بولنگ بھی کی اور 27.3 اوور میں 62 رن پر دو وکٹ لئے۔ فاسٹ بولر محمد سمیع کو 16 اوور میں 54 رن پر ایک وکٹ ملا جبکہ جسپريت بمراہ نے 16 اوور میں 43 رن دیئے لیکن کوئی وکٹ نہیں نکال سکے۔
آسٹریلیا کے لیے میچ کا تیسرا دن کافی مایوس کن رہا اور صرف مارکس ہیرس (79 رن) کی نصف سنچری اننگز کھیل سکے۔ بارش کی وجہ سے میچ میں وقت سے پہلے اسٹمپس کرانا پڑا، اس وقت تک پیٹر هیڈاسکوب 28 رن اور پیٹ کمنز 25 رنز بنا کر کریز پر تھے۔
اس سے پہلے صبح میزبان ٹیم نے اپنی اننگز کا آغاز بغیر کسی نقصان کے کل کے 24 رن سے آگے شروع کیا تھا۔ اس کے ناٹ آؤٹ بلے باز ہیرس نے 19 رنز اور عثمان خواجہ نے پانچ رنز سے اننگز کو آگے بڑھایا اور پہلے وکٹ کے لئے 72 رن کی ساجھےداری کی۔ جڈیجہ نے خواجہ کو چتیشور پجارا کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندستان کو 22 ویں اوور میں پہلا وکٹ دلا دیا۔ خواجہ نے 71 گیندوں کی اننگز میں تین چوکے لگا کر 27 رن بنائے۔
اوپنر ہیرس نے 120 گیندوں میں آٹھ چوکے لگا کر 79 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی اور دن کے کھیل کے اختتام تک وہ آسٹریلوی اننگز میں بہترین اسکورر ثابت ہوئے۔ ہیرس کو جڈیجہ نے بولڈ کر میزبان ٹیم کا اہم وکٹ نکالا۔ اس کے بعد آسٹریلیا نے بہت تیزی سے وکٹ گنوائے اور چائے کے وقفہ تک 198 رن جوڑ کر اس کے پانچ وکٹ گر گئے۔
اچھی شروعات کے بعد آسٹریلوی ٹیم تال کھو بیٹھی اور میچ کے آخری دو سیشن میں ہندستانی بولر پوری طرح حاوی رہے۔ شان مارش آٹھ رنز بنا کر جڈیجہ کی گیند پر اجنکیا رہانے کو کیچ دے بیٹھے جبکہ سمیع نے آسٹریلیا کے نئے نمبر تین بلے باز مارنس لابچاگے (38) کو رہانے کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ لابچاگے نے 95 گیندوں میں سات چوکے لگا کر 38 رن بنائے جو دن کی دوسری بڑی اننگز رہی۔
اس کے بعد پیٹر هیڈاسکوب اور ٹریوس ہیڈ نے پانچویں وکٹ کے لئے 40 رن کی ساجھےداری کر بورڈ پر کچھ رن جوڑے، لیکن چائے کے وقفہ سے ٹھیک پہلے کلدیپ نے اپنی گیند پر ہیڈ کو کیچ کر آسٹریلیا کی آدھی ٹیم کو پویلین بھیج دیا۔ میزبان ٹیم کے کپتان ٹم پین بھی کلدیپ کا شکار بنے اور چائے کے بعد جلد ہی انہوں نے اپنا وکٹ گنوا دیا۔ انہوں نے 14 گیندوں میں ایک چوکا لگایا اور صرف پانچ رن ہی بنا سکے۔
بارش کی وجہ سے میچ کو وقت سے پہلے ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ اس سے پہلے تک هیڈاسکوب نے 91 گیندوں میں تین چوکے لگا کر ناٹ آؤٹ 28 رن بنا لئے ہیں جبکہ کمنز نے 41 گیندوں میں چھ چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 25 رنز بنائے ہیں۔ دونوں نے ساتویں وکٹ کے لیے 38 رنز کی ناٹ آؤٹ ساجھےداری کر لی ہے اور میچ کے چوتھے دن ان پر رن بٹورنے کی بڑی ذمہ داری رہے گی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close