ہندوستان

26؍11کے حملہ آوروں کو بخشا نہیں جائے گا : مودی

بھیلواڑہ: وزیراعظم نریندر مودی نے کانگریس پر سرجیکل اسٹرائک پر سوال اٹھانے کا الزام لگاتے ہوئے کہاکہ ممبئی میں ہوئے 26/11کے حملہ آوروں کو بخشا نہیں جائے گا۔مسٹرمودی انتخابی تشہیر کے اپنے دوسرے دن آج یہاں منعقدہ عوامی جلسہ میں کہاکہ ممبئی حملے کے واقعہ کو آج دس برس ہوگئے۔ انہوں نے یقین دلاتے ہوئے کہاکہ ہم موقع کی تلاش میں ہے۔26/11کے حملہ آوروں کو چھوڑیں گے نہیں۔انہوں نے کہاکہ کانگریس وطن سے محبت کے سبق پڑھا رہی تھی وہیں ہماری حکومت آنے کے بعد فوج نے سرجیکل اسٹرائک کرکے دہشت گردوں سے حساب برابر کردیا۔ انہوں نے کہاکہ دشمن کو اس کے گھر میں جاکر مارا گیا اور ہر ہندستانی کوفخر ہوا تھا۔ ایسے وقت میں کانگریس نے سرجیکل اسٹرائک پر سوال ٹھایا۔ ویڈیو دکھاو سرجیکل اسٹرائک ہوا یا نہیں ۔ اس وقت کانگریس کو ملک سے محبت یاد نہیں آئی۔ انہوں نے کہاکہ اب کانگریس کو جواب دینا ہوگا۔مسٹر مودی نے کانگریس کے صدر راہل گاندھی پرطنز کرتے ہوئے کہاکہ میں نے کہا تھا کہ میں محنت ومشقت میں کوئی کسر نہیں چھوڑوں گا ۔ میری محنت میں آپ کوکوئی کمی نظر آتی ہے ، دن رات کام کرتا ہوں یا نہیں، آپ نے کبھی سنا کہ میں نے چھٹی لی ہے، کبھی سنا ہے کہ میں یہاں وہاں ٹہلنے چلا گیا۔ کبھی سنا کہ میں سات دن نظر نہیں آیا ، میں میر ا حساب دے رہا ہوں۔انہوں نے کہاکہ اپوزیشن میرے کام کا حساب مانگتا ہے ۔ آپ کے یہاں ا ن کے لیڈر آجائیں تو ان سے پوچھ لینا کی آزادی کو ساٹھ برس ہوگئے کیا کیا، انہوں نے کہا کہ ساٹھ برس بعد انہیں موقع ملا اور آٹھ برس تک نامدار کی نسل سے سوال پوچھنے کی ہمت کسی نے نہیں کی لیکن مجھ میں ہمت ہے۔ جواب دینا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ مودی حساب بھی مانگتا ہے اور حساب دیتا بھی ہے۔ لمحہ لمحہ اور پائی پائی کا حساب دیتا ہے۔مسٹر مودی نے آج کے دن یوم آئین کو دلت اور غریب کے فخر کرنے کا دن قرار دیتے ہوئے کہاکہ بابا صاحب امبیڈکر نے آئین میں تمام کو حقوق اور یکسانیت کی بات کہی لیکن کانگریس کے لوگ پوچھ رہے ہیں کہ مودی کی ذات کیا ہے۔
انہوں نے کہاکہ کانگریس کے لیڈر ملک میں ترقی، تعلیم وغیرہ امور پر بات چیت کرنا نہیں چاہتی کیوں کہ الیکشن میں ان کے پاس کوئی موضوع نہیں ہے۔ انہوں نے کانگریس پر ذات پات بڑھانے کے الزام لگاتے ہوئے کہاکہ کانگریس کا ایک لیڈر کہتا ہے کہ مودی کی ذات کیا ہے اور دوسرا کہتا ہے کہ مودی کا باپ کون ہے۔ کانگریس کے لوگ کہتے ہیں مودی ہوتے کون ہیں ان سے حساب پوچھنے والے۔ انہوں نے کہاکہ مودی ایسا ’کامدار‘ ہے جس کے پیچھے سوا سو کروڑ ہندستانی کھڑے ہیں۔انہوں نے کہاکہ کانگریس کی گلی سے دلی تک حکمرانی چلتی تھی لیکن گزشتہ 60-65برسوں میں دیہی کنبوں میں بیت الخلا کی سہولت نہیں تھی وہاں ان کی حکومت آنے کے بعد گزشتہ چار برس میں یہ سہولت 40سے 95فیصد تک بڑھاد دی گئی۔
انہوں نے کہاکہ ان کی حکومت آنے سے پہلے پچاس فیصد لوگوں کا بینک میں اکاونٹ تھا اور گزشتہ چار برس میں ہر ہندستانی کا بینک میں اکاونٹ کھول دیا گیا ہے۔انہوں نے کہاکہ راجستھان نے ٹھان لی ہے کہ ریاست میں پھر ایک بار بی جے پی کی حکومت بناکر رہیں گے۔ ترقی کے سفر کو مزید طاقت دیں گے اور نئی تاریخ رقم کریں گے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close