بہارپٹنہسیاست

3سے کم سیٹوں پرآر ایل ایس پی ماننےکو تیار نہیں

بہار این ڈی اے کی حلیف جماعتوں میں رسہ کشی جاری

پٹنہ،8؍نومبر:بہار میں دیوالی پر خوب پٹاخے پھوڑے گئے لیکن بہار کی سیاست میں آج دیوالی کے دوسرے دن بھی بڑے پٹاخے پھوٹے۔ بہار این ڈی اے میں ایک بار پھر سے سیٹوں کا معاملہ مزید گہراتا جارہا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ سیٹوںکولے کر بہار میں این ڈی اے کی حلیف جماعتوں کے درمیان پینچ پھنس گیا ہے۔ اوپندر کشواہا کی پارٹی آر ایل ایس پی کی جانب سے بڑا بیا ن آیا ہے۔ آر ایل ایس پی کی جانب سے ترجمان آنند مادھو نےکہا ہے کہ ان کی پارٹی 3سیٹوں سے کم پر انتخاب نہیں لڑے گی۔
یاد رہے کہ سیٹ شیئرنگ کے معاملے پر پہلے سے ہی این ڈی اے کی حلیف جماعتوں میں کچھ بھی ٹھیک نہیںچل رہا تھا۔ ذرائع کے مطابق جیسے ہی میڈیا میں آر ایل ایس پی کو 2سیٹیں دینے کی بات سامنے آئی،اس وقت سے ہی بہار این ڈی اے میں کچھ بھی ٹھیک نہیں چل رہا ہے۔ ایسے میں اب آر ایل ایس پی کےترجمان نے یہ صاف کر دیا ہے کہ ان کی پارٹی کو 3سے کم سیٹیںمنظور نہیں ہیں۔ آنند مادھو نے کہا کہ انکی پارٹی 3سے زائد سیٹوں پر لوک سبھا انتخابات لڑے گی۔
اس سے قبل نئی دہلی میں نتیش کمار اور امت شاہ کی ملاقات کے بعد دونوں نے پریس کانفرنس میں یہ بات کہی تھی کہ بی جے پی اور جے ڈی یو برابر برابر سیٹوں پر انتخاب لڑے گی۔ ان سیٹوں کا اعلان ابھی نہیں ہوا ہے۔ بتادیں کہ میڈیا میں ا س سے پہلے یہ خبر آچکی تھی کہ جے ڈی یو اور بی جے پی 17-17، رام ولاس پاسوان کی پارٹی کو 4اور آر ایل ایس پی کو 2سیٹیں دینے کی بات این ڈی اے میں طے ہوئی ہے۔
بتادیں کہ دہلی میں اوپندر کشواہا کی ملاقات بھی امیت شاہ سے نہیں ہوسکی تھی ۔ وہیں آر ایل ایس پی کے لیڈر ناگمنی بھی اب کھل کر این ڈی اے کے خلاف بول رہے ہیں۔ ایسے میں آج اوپندر کشواہا کی پارٹی کے ترجمان آنند مادھو کے اس بیان نے آر ایل ایس پی کے رخ کو صاف کر دیا ہے۔ وہیں این ڈی اے میںسیٹوں کو لے کر پھنسے اس پینچ کا فائدہ اپوزیشن اٹھانے لگی ہے۔ اپوزیشن چاہتی ہے کہ اوپندر کشواہا این ڈی اےچھوڑ کر عظیم اتحاد کا دامن تھام لیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close